Aakhri Aarzoo آخری آرزو ، نظم ، تحریراور پیشکش شارق علی The last wish, Urdu / Hindi poem with rendition by Shariq Ali

آخری آرزو

مرے دھیان کے آخری منظر میں

کچھ تصویریں کچھ آوازیں

میری ماں آے ماتھا چومے

 اور باپ کہے کوئی ڈر کیسا

آنسو میں لئے بھیگا ہوا غم

پھر تم آو اور کچھ نہ کہو

اس دل کے کواڑ پہ دستک ہو

وہ خواب جو سانس کی ڈوری تھے

مرے پاس آئیں اور مجھ سے کہیں

دنیا کی سنگدل گلیوں کے

مظلوم جو تم سے مل نہ سکے

کہتے ہیں کے تم نے جو بھی لکھے

وہ لفظ ہماری ہمت ہیں

بس اتنا ہی کر سکتے تھے تم

دل شاد رہو ، چنتا نہ کرو

لو گہرا سانس محبت کا

اور مر جاؤ

شارق علی

اکتیس مئی دو ہزار سولہ

Leave a Reply

Your email address will not be published.